پاکستان

اسسٹنٹ کمشنر کو ڈانٹنے کا معاملہ، فردوس عاشق کا ردعمل

وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کی معاون خصوصی برائے اطلاعات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے سیالکوٹ کی اسسٹنٹ کمشنر سونیا صدف کو ڈانٹنے پر ردعمل کا اظہار کیا ہے۔لاہور میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے فردوس عاشق کا کہنا تھاکہ بیگانے کی شادی میں عبداللہ دیوانے والے بھی کودے ہوئے ہیں اور کچھ بی جمالوں کا کردار ادا کررہے ہیں۔

انہوں نے بتایا کہ گزشتہ روز رمضان بازار میں مس منیجمنٹ تھی، بدقسمتی سے چیف سیکرٹری کو حقائق مسخ کرکے بتائے گئے، کئی بازاروں اور یوٹیلٹی اسٹور کا دورہ کیا لیکن کہیں سے ایسا ری ایکشن نہیں آیا، مسائل کی نشاندہی کرنا ہماراکام ہے۔
ان کا کہنا تھاکہ ڈاکٹر فردوس عوامی مسائل کی جنگ لڑنے گئی تھی یا کسی خاندان کی نہیں، لوگ واقعے میں اپنی اپنی مرضی کا رنگ بھر رہے ہیں، عوامی نمائندوں کے درمیان ٹکراؤ پیدا کرنے والوں کو مایوسی ہوگی۔

فردوس عاشق اعوان کا کہنا تھا کہ بیوروکریسی حکومت کا حصہ ہے، ان کو نیچا نہیں دکھا رہے انہیں برا منانے کی بجائے بہتری پیدا کرنی چاہیے، ان کے ساتھ کوئی ٹکراو نہیں ہے۔

معاون خصوصی کا کہنا تھا کہ ایک روز پہلے کے واقعے پر وزیر اعلی نے مجھے اور چیف سیکرٹری کو طلب کیا تھا، انکوائری کا فیصلہ کیا ہے اور رپورٹ بھی طلب کر لی ہے۔

انہوں نے کہا کہ عوام کے ٹیکس سے تنخواہ لینے والا عوام کے سامنے جوابدہ ہے، اے سی صاحبہ گرمی برداشت کرنے کا حوصلہ پیدا کریں، رمضان بازاروں میں عوام کی راہ میں رکاوٹ بننے والوں کو برداشت نہیں کریں گے۔

ایک سوال کے جواب میں کہا کہ عثمان ڈار کو اسلام آباد میں بیٹھ کر حلقے کے مسائل کا علم نہیں، وہ اپنے مورچے پر فائر کرکے اپنی پارٹی کی شہادتیں نہ کرائیں اور اپنے اندر صبر پیدا کریں۔

ان کا کہنا تھا کہ چیف سیکرٹری کو مسخ حقائق پیش کیے گئے۔

خیال رہے کہ گزشتہ روز وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کی معاون خصوصی برائے اطلاعات ونشریات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے اسسٹنٹ کمشنر (اے سی) سیالکوٹ سونیا صدف کو بازار میں سب کے سامنے ڈانٹ پلائی تھی۔


subscribe YT Channel


Source

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

ADVERTISEMENT
Back to top button