اہم خبریں

دہشتگردوں نے انسداد دہشتگردی عدالت کے جج کو بیوی بچوں سمیت قتل کردیا

دہشتگردوں نے انسداد دہشتگردی عدالت کے جج کو بیوی بچوں سمیت قتل کردیا

صوابی(ڈیلی  پاکستان  آن  لائن) نامعلوم  دہشت  گردوں  نے  صوابی انٹرچینج پرانسداد دہشتگردی عدالت کےجج آفتاب آفریدی کواہلیہ ،بیٹی  اور  تین  سالہ  نواسےسمیت اندھا  دھند  فائرنگ  کر  کے  شہید  کردیا  ،  دہشت  گرد  فائرنگ  کے  بعد  با  آسانی  فرار  ہو  گئے  جبکہ  واقعہ  کی  اطلاع  ملتے  ہی  اعلی  حکام  جائے  وقوعہ  پر  پہنچ  گئے  ہیں  ،سیکیورٹی  فورسز  اور  پولیس  نے  پورے  علاقے  کو  گھیرے  میں  لیتے  ہوئے  سرچ  آپریشن  شروع  کردیا  ہے۔

تفصیلات  کے  مطابق  صوابی  انٹر  چینج  پر  دہشت  گردی  کا  بڑا  واقعہ  پیش  آیا  ہے  جہاں  نامعلوم  کار  سوار  دہشت  گردوں  نے انسداد دہشتگردی عدالت کےجج آفتاب آفریدی کواہلیہ،بیٹی  اور  تین  سالہ  نواسے سمیت اندھا  دھند  فائرنگ  کر  کے  شہید  کردیا  ،جج آفتاب آفریدی  سوات  سے  اپنے  اہل  خانہ  کے  ہمراہ اسلام  آباد جا  رہے  تھے  کہ  صوابی انٹرچینج کے  قریب  نامعلوم  دہشت  گردوں  نے  ان  کی  گاڑی  پر  حملہ  کردیا  ،دہشت  گردوں  کے  حملے  میں   گاڑی میں موجود جج آفتاب  آفریدی ان کی اہلیہ، بیٹی اورنواسے سمیت چار افراد جاں  بحق   جب کہ دو افراد زخمی ہوئے ہیں جن میں گن مین اور ڈرائیور شامل ہیں۔دشہت  گردی  کا  یہ  افسوسناک  واقعہ   انبار انٹرچینج سے دس کلومیٹردور  پیش آیا ہے۔ موٹر وے کی مین لائن پر دوسری جانب کی لائن سے گاڑی پر حملہ ہوا ،واقعہ  کی  اطلاع  ملتے  ہی آئی جی  خیبر  پختونخوا   اور دیگر حکام جائے وقوعہ پرپہنچ  گئے  ہیں  ۔

مزید :

اہم خبریںقومیعلاقائیخیبرپختون خواہصوابیBreaking News




Source

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button